حکومت کا 18 جنوری سے تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان
پہلی سے 8 تک 25جنوری اور یکم فروری سے یونیورسٹیز میں تدریسی عمل شروع ہوگا مارچ اور اپریل میں بورڈز کے امتحانات ملتوی، امتحانات مئی اور جون میں ہوں گے،کورونا کی دوسری لہر ابھی ختم نہیں ہوئی مزید احتیاط کی ضرورت ہے،۔

وزیر تعلیم و معاون خصوصی صحت کی مشترکہ پریس کانفرنس اسلام آباد (- آن لائن۔ 04 جنوری2021ء) حکومت نے نویں سے بارہویں تک تعلیمی ادارے 18 جنوری سے کھولنے کا اعلان کر دیا ہے ۔ پہلی سے 8 ویں تک تعلیمی ادارے 25 جنوری سے کھولے جائیں گے جبکہ یکم فروری سے یونیورسٹیز میں تدریس کا عمل شروع ہوگا۔۔تفصیلات کے مطابق پیر کو بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس ہوئی ۔

جس میں ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے سے متعلق مشاورت کی گئی۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر قیادت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس میں چاروں صوبوں کے وزرائے تعلیم شریک ہوئے جس کے بعد وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اور وزیر اعظم کے معاون خصوصی بر ائے صحت فیصل سلطان نے مشترکہ پر یس کانفرنس کر تے ہو ئے بتا یا کہ اجلاس میں تعلیمی ادارے 11 جنوری سے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ۔

نویں سے بارویں تک تعلیمی ادارے 11 جنوری سے کھولے جائیں گے۔ پہلی سے آٹھویں تک تعلیمی اداری25جنوری سے کھولے جائیں گے۔جب کہ یکم فروری سے یونیورسٹیز کھولنے کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے۔اساتذہ اور انتظامیہ11 جنوری کو تعلیمی اداروں میں جا سکیں گے۔ مارچ اور اپریل میں ہونے والے بورڈز کے امتحانات ملتوی کر دیئے گئے ہیں۔ بورڈ کے امتحانات اب مئی اور جون میں ہوں گے۔شفقت محمود نے بتایا کہ 15 تاریخ کو ایک اور اجلاس ہوگا جس میں صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے مزید فیصلے ہو سکتے ہیں، مارچ میں ہونے والے امتحانات مؤخر ہوں گے اور موسم گرما کی تعطیلات بھی اس سال کم ہوں گی۔ معاون خصوصی صحت نے بتایا کہ کورونا کی دوسری لہر کی شدت میں کمی تعلیمی اداروں کی بندش کے سبب ہوئی۔ان کا کہنا تھا کہ اس معاملے میں ہمیں مزید احتیاط کی ضرورت ہے کیوں کہ دوسری لہر ابھی ختم نہیں ہوئی۔اس سے قبل ملک میں تعلیمی ادارے 11 کی بجائے 25 جنوری کو کھول دیے جانے کا امکان بھی ظاہر کیا گیا تھا،اسکولوں کو مرحلہ وار کھولنے کی تجاویز بھی دی گئی تھیں۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں